Contemporary Issues [عصری مسائل]

8 Item(s)

per page

  • اسلام کو تباہ کرنے کے لئے امریکی مہم

     صفحات کی تعداد 711
    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع

    کچھ دہائیوں پہلے اسلامی مبدا اور مغربی سرمایہدارانہ جمہوری  ماڈل کے درمیان تصادم واضح طور پر لوگوں کے سامنے موجود نہیں تھا جو کہ اب یہ دن کی روشنی کی طرح لوگوں پر عیان ہو چکی ہے اور اسکے لئے کسی دلیل کی ضرورت نہیں۔ سویت یونین کے سقوط کے بعد خصوصاً مغرب نے اسلام اور اسکے مبدا کو آگے بڑھنے سے روکنے کے لئے کوی کثر روا نہیں رکھا اور اسے کچلنے کی مہم پوری دنیا میں چلا رکھی ہے۔اس مہم کے دوران اسلام کو دبانے کیلئے بطور اسلوب ، جمہوریت، اظہار رائے کی آزادی اورفری  مارکیٹ کی پالیسی کو فروغ اس حد تک دینے کی کوشش کی گئی اور اسے مثالی بنایا گیا کہ اگر کوئی شخص ان اصولوں کے خلاف منھ کھولنے کی کوشش کرے تو اسکا مذاق اڑایا جائے اور اسے ترقی اور جدیدیت کا مخالف تصویر کیا جائے۔

    مغرب کے اسی دباؤ نے لوگوں کی اور علما حضرات کی ایک کثیر تعداد تیار کی جو اسلام کی ایسی تاویلات کے ساتھ سامنے آئےجو مغربی نظریات کے مطابق ہو اور اسلام سے نہ ہو۔

    اس کتاب میں مغرب کی جانب سے مسلمانوں کے سامنے پیش کئے جانے والے ان نام نہاد مثالی نظریات کو بھی پیش کیا گیا ہے۔ تاکہ مسلمانوں کو اسلام کی نشاۃ ثانیہ سے دور کیئے جانے کی مغربی سازش سے بچا جا سکے۔

    Learn More
    $5.00

  • اسلام کا نظام حکومت

    Taqiuddin An-Nabhānī

    Urdu Translation of the 5th Edition, 2012
    Paperback, 352 Pages
    12 x 18 cm
    Dar Al Ilm Publishers

    The book discusses the various aspects of the Islamic Ruling system such as the Shape of the Ruling system in Islam, the Qawaid of the Ruling system of Islam , the structure of the State, the Conditions for appointing someone as the Khalifah, the Term of the Khilafah, the mandatory powers of the Khalifah, the removal of the Khalifah, the Khalifah’s assistants, the Army, the Governors, The Majlis al Ummah and many others.


    This the author, Shekh TaqiUddin An Nabahani explains in this book which is in its fifth edition presenting evidences from the Qur’an and the Sunnah of the Messenger .

    Learn More
    $11.00

  • اسلامی ریاست کے لیے آئین اور اسکے دلائل

    مصنف کا نام  - حزب التحرير

     صفحات کی تعداد
     (٢ جلد) - ٤٢٠+٢٥٤ صفحات 

    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع

    موجودہ دور میں جب ہم امت کا مشاہدہ کرتے ہیں تو ہم یہ محسوس کرتے ہیں کہ وہ اسلام سے بے انتہا محبت کرتی ہے اور اپنی زندگی کو اسلام کے مطابق چلانا چاہتی ہے۔جبکہ اسلامی ریاست کی دفاع، خارجہ پالیسی اور اقتصادی نظام اور پالیسی کے تعلق سے زیادہ تر لوگوں میں اسلامی احکام کی فہم کے تعلق سے ناکامی پایئ جاتی ہے یہاں تک کہ ایسے بہت سے لوگ بھی پاے جاتے ہیں جو اس بات کو بھی نہیں سمجھ پاتے کہ اسلامی  ریاست کس طرح فقہی اختلاف کا مسلہ حل کر سکتی  ہے ۔" دستور کا تعرف" ایک ایسا مسودہ ہے جو اس بات کو پیش کرتا ہے کہ کس طرح حقیقی خلافت لوگوں کے معاملات کی نگرانی گرچہ وہ سماجی نظام ہو یا دو ممالک کے درمیان تجارت ہو،کرنسی کا اجریء ہو،قاضی کا تقرر ہو یا دوسرے ریاستی مسائل ہوں ان سب کا حل اسلام کے تفصیلی شرعی دلائل کے ساتھ پیش کیا گیا ہے۔


    یہ ایک ایسا دستور کا مسودہ ہے جو اس بات کیلے تیارکیا گیا ہے کہ جیسے ہی مسلم ممالک میں حقیقی خلافت قائم ہوتی ہےفوراََ اسے نافذ کیا جا سکے۔نتیجاََ یہ ایک ایسی اہم کتاب ہے جو ان لوگوں کو علمی مواد فراہم کرتی ہے جو خلافت کے واپسی کے بعد کے ریاست کے مسائل اور انکا حل کا مطالع کرنا چاہتے ہوں۔

     

    Learn More
    $20.00

  • تہذیبوں کا تصادم ناگزیر ہے

     صفحات کی تعداد 86
    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع

    کتہزیبوں کا تصادم نام کا مضمون جو  پنٹی گن نے لکھا اس نے جنگی تجزیہ نگاروں، مفکرین، سیاست دانوں اور امت کی توجہ اپنی طرف مبزول کرائی اور یہ سلسلہ اس وقت سے جاری ہے جب یہ ۱۹۹۳ میں  امور خارجہ کے رسالہ میں شائع ہوئی۔ یہ مضمون اس اہم موڑ پر سامنے آیا جب مغرب نے اشتراکیت

    کو شکست دی اور اسلام کو واحد دشمن کے طور پر پیش کیا جس پر مغرب کو اپنی توجہ مرکوز کرنی تھی۔

    حالانکہ اگر ہم اسلام اور اسکے عقائد پر سرسری نگاہ ڈالیں تو ہم یہ محسوس کریں گے کہ  پنٹی گن نے جو بات کہی وہ کوئی نئی چیز نہیں تھی بلکہ یہ تو ناگزیر ہے اور اسلامی مصادر اور تاریخ بھی اسکی گواہ ہے۔

    اسلام کے عروج سے ہی اسلام اور کفر کے درمیان ذبردست جدوجہد جاری ہے اور جاری رہے گی جب تک کہ اللہ کا وعدہ پورا نہیں ہو جاتا۔

    یہ کتاب پوری طرح سے ان لوگوں کی غلط فہمی کا ازالہ کرتی ہے جو کفر اور اسلام کے اس جدوجہد کا انکار کرتے ہیں۔ گرچہ انکا یہ انکار لا علمی کی وجہ سے ہو یا حقائق کے جانتے ہوئے۔

    ۶۰ صفحات پر مبنی یہ کتاب اس موضوع کو جامع انداز سے پیش کرتے ہوئے اسکی ابتداء تہزیب کے تعارف اور اسکے خد و خال کو پیش کرتے ہوئے اس بات کو بھی واضح کرتی ہے کہ کس طرح حق اور باطل کے درمیان مضاہمت ممکن نہیں۔

     

    Learn More
    $5.00

  • جمہوریت نظام کفر ہے

    مصنف کا نام  -  شيخ عبد القديم زلوم
     صفحات کی تعداد
     46

    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع

    جمہوریت اپنی تعریف میں اسلاً عوام کی حکمرانی کا نام ہے یعنی اس نظام مے قانون سازی کا اختیار عوام کے پاس ہوتا ہے۔ اس کے برعکس اسلام میں حاکمیت صرف اللہ سبحانہ وتعلیٰ کی ہے اور صرف اللہ تعلیٰ ہی کے پاس یہ حق ہے کے وہ قانون سازی کرے کہ انسانوں کے لئے کیا صحیح  ہے اور کیا غلط ہے۔تاہم کچھ لوگ جمہوریت اور شوریٰ کے معنیٰ کو خلط ملط کرکے پیش کرتے ہیں اور پھر وہ اس بات پر بحث و مباحثے کرتے ہیں کہ اسلام بھی مسلمانوں کو  مشورے سے حکومت کرنے کا حکم دیتا ہے۔

    افسوس کی بات یہ ہے کہ یہ صرف ایک الگ تصور کی ورائی ادراج کرنے کے سوا کچھ بھی نہیں اور یہ کہنا کفر ہے کہ جمہوریت اسلام کا حصہ ہے۔قرآن و سنت کی روشنی میں یہ کتاب مفصل انداز سے لوگوں کے درمیان جمہورہت اور شوریٰ کو لیکر الجھن اور غلط فہمیوں کی تردید کرتی ہے اور آگے بڑھتے ہوئے اس بات پر بحث کرتی ہے کہ کس طرح جمہوری انتخابات میں حصہ لینا بھی شریعت کے خلاف ہے۔

     

    Learn More
    $5.00

  • خطرناک تصوّرات

     صفحات کی تعداد 56
    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع

    منگولوں سے شروع ہو کر صلیبی جنگوں اور پھر اسپین (Spain) میں مسلمانوں کے سفاکانہ قتل تک امت مسلمہ نے ماضی میں مشرق و مغرب کے پے در پے حملوں کا سامنا کیا ہے۔ ان کے تمام ترحملوں کا واحد مقصد, خلافت یعنی اسلامی ریاست کا خاتمہ تھا جبکہ کوشش میں وہ پچھلی صدی میں کامیاب بھی ہو گئے۔ اسی وقت سے دشمن اسلام دن رات مسلمانوں کو اسلامی عقیدے کے سیاسی جوہر سے دور رکھنے کے لئے کوشاں ہیں تاکہ وہ اسلامی عقیدے میں قومیت (Nationalism) ، سیکولرزم (Secularism) ، جمہوریت (Democracy) ، آزادی (Freedom) وغیرہ جیسے باطل افکار کو شامل کریں۔


    چنانچہ یہ کتاب "خطرناک تصّورات " ایک نایاب شاہکار ہے جو کفار کے افکار و اعمال کو بے نقاب کرتی ہے تاکہ امت مسلمہ اپنے خلاف کفار کی تمام تر چالوں اور منصوبہ بندیوں سے آگاہ ہو۔ یہ کتاب دہشت گردی (Terrorism) سے شروع ہو کہ بین المذاہب مکالمے (Interfaith Dialogue) ، بنیاد پرستی (Fundamentalism) سے مفاہمت اور آخر میں گلوبلائزیشن (Globalisation) جیسے متفرق موضوعات پر بڑی وسعت سے بحث کرتی ہے۔ امت مسلمہ کسی دھوکے کا شکار نہ ہو بلکہ اسلام کی رسی کو مضبوتی سے پکڑے رہے، اس امر کو یقینی بنانے کے لئے یہ کتاب ایک ناگزیر مطالعہ ہے۔

     

    Learn More
    $5.00

  • ریاست خلافت کی بقاعدہ تعلیم کی بنیادیں

     صفحات کی تعداد 68
    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع


    ہر قوم اپنی فکر اور عقیدے کی حفاظت کرتی ہے جس پر وہ یقین رکھتی ہے تاکہ اسکی ثقافت، قوم کے مقاصد اور نظام حیات لوگوں کے ذہن و دل میں اچھی طرح گھر کر جائیں کیونکہ فکر اور عقیدہ میں وہ کسی تہذیب کی بنیاد ہوتی ہے اور اس تہذیب کو دوسرے سے نمایاں حیثیت حاصل ہوتی ہے۔

    اسلام کا نقطہ نظریہ اس سے مختلف نہیں جس نے ۱۴۰۰سالوں سے زیادہ ایک مبداء (Ideology) کی صورت میں دنیا میں حکومت کی ہے۔دراصل مدینہ ہجرت کے بعد   سب سے پہلے مسجد کی تعمیر کرنا   اور علم حاصل کرنے کی فرضیت کا حکم اس بات کے گواہ ہیں کہ ہماری زندگی میں تعلیم کس قدر اہمیت رکھتی ہے۔یہ کتاب "اسلام کی تعلیمی پالیسی" اس بات پر روشنی ڈالتی ہے کہ خلافت کے دوبارہ قیام کے بعدتعلیمی نظام کی کیا صور ت ہو گی۔

    اس کتاب میں تعلیم کے مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کے لئے احکام شرعیہ کو بنیاد بنا کر چند انتظامی قوانین کے ساتھ اسلامی تعلیمی پالیسی کی وضاحت کی گئی ہے۔ 

     

    Learn More
    $5.00

  • معاشرہ

    مصنف کا نام  -  سليم فریڈرکس 
     صفحات کی تعداد
     20

    اشاعت کا سال 2016
    اشاعت گھر المكتبة الاسلامية للنشر و التوزييع

     معاشرہ کسے کہا جا سکتا ہے؟کیا ایک مخصوص علاقہ میں رہنے والے چند افراد کے گروہ کو یا پھر ایسے افراد کا ایک گروہ جو آپس میں قومیت یا وطنیت کا ربت رکھنے والے ہوں یا پھر ایسے لوگوں کا گروہ جو آپس میں ایک دوسرے سے ایک ہی خیالات اور جذبات کی بنیاد پر جوڑے ہوں؟اسلام مسلمانوں کو ایک ایسے معاشرے اور ایسے ماحول کی تشکیل کا حکم دیتا ہے جس میں لوگوں پر اسلام کی پیروی کرنا آسان ہو جائے۔

    تاہم آج ہم جس معاشرے میں رہتے ہیں اس میں عوامی زندگی میں اسلام کی پیروی کرنے کی وجہ سے پیش آنے والی مشکلات کے باوجود اس معاشرے نے ہمارے ذاتی معاملات میں بھی اسلام کی پیروی کرنا بہت ہی مشکل بنا دیا ہے۔یہ کتاب اس وضاحت کے ساتھ شروع ہوتی ہے کہ معاشرہ کسے کہتے ہیں اور آگے بڑھتے ہوئے یہ بتاتی ہے کہ وہ معاشرہ کیسے قائم کیا جا سکتا ہے جس کی بات اسلام کرتا ہے ۔

     

    Learn More
    $3.00

8 Item(s)

per page